2010 2007
This presentation is the property of its rightful owner.
Sponsored Links
1 / 25

بی ٹی ڈبلیو سی کے نئے بین المیقاتی عمل 2010 – 2007 PowerPoint PPT Presentation


  • 74 Views
  • Uploaded on
  • Presentation posted in: General

بی ٹی ڈبلیو سی کے نئے بین المیقاتی عمل 2010 – 2007. لیکچر نمبر 10. ا۔ خاکہ. - پہلا بین المیقاتی عمل ۔ سلائیڈ 3-2 - چھٹا جائزہ اجلاس ۔ سلائیڈ 8-4 - بی ٹی ڈبلیو سی 2007 کے اجلاس ۔ سلائیڈ 10-9 - بی ٹی ڈبلیو سی 2008 کے اجلاس ۔ سلائیڈ 16-11

Download Presentation

بی ٹی ڈبلیو سی کے نئے بین المیقاتی عمل 2010 – 2007

An Image/Link below is provided (as is) to download presentation

Download Policy: Content on the Website is provided to you AS IS for your information and personal use and may not be sold / licensed / shared on other websites without getting consent from its author.While downloading, if for some reason you are not able to download a presentation, the publisher may have deleted the file from their server.


- - - - - - - - - - - - - - - - - - - - - - - - - - E N D - - - - - - - - - - - - - - - - - - - - - - - - - -

Presentation Transcript


2010 2007

بی ٹی ڈبلیو سی کے نئے بین المیقاتی عمل 2010 – 2007

لیکچر نمبر 10


2010 2007

ا۔ خاکہ

- پہلا بین المیقاتی عمل

۔ سلائیڈ 3-2

- چھٹا جائزہ اجلاس

۔ سلائیڈ 8-4

- بی ٹی ڈبلیو سی 2007 کے اجلاس

۔ سلائیڈ 10-9

- بی ٹی ڈبلیو سی 2008 کے اجلاس

۔ سلائیڈ 16-11

- بی ٹی ڈبلیو سی کے 2009 اور 2010 کے اجلاسوں سے توقعات

۔ سلائیڈ 18-17

- حیاتیاتی اور سمیاتی ہتھیاروں کے اجلاس کا مستقبل

۔ سلائیڈ 19

- بی ٹی ڈبلیو سی میں سائنس دانوں کا کردار

۔ سلائیڈ 20


2010 2007

ب - پہلا بین المیقاتی عمل (ا)

- ناکامی کے بعد ، 2001 میں، 1990 کے مذاکرات کے تحقیقاتی پروٹوکول کیلئے، پانچواں جائزہ اجلاس 2002 میں دوبارہ شروع کیا گیا اور دو طرفہ مذاکرات کی بنیاد پر ریاستی جماعتیں متفق ہوئیں ایک: ” بیماری کے جان بوجھ کر ہتھیار کے طور پر استعمال سے جنگ کی نئی حکمت عملی پر”

- تصدیق کے دور کے لئے بین الاقوامی مذاکرات کی بجائے مذاکرات کا دھیان قومی عملدرامد پر بہتری کے مقصد پر تبدیل ہوگیا


2010 2007

ج - پہلا بین المیقاتی عمل (ب)

- ابتداء میں جنیوا میں وفود (پہلے) بین المیقاتی عمل کی قابلیت کے حوالے سے شک پرستی کا شکار تھے

- تاہم، 2005 سے، ان مزاکرات کی اہمیت کے بارے میں ریاستیں بہت زیادہ مثبت تھیں

- ” بین المیقاتی کام کے پروگراموں نے نہ صرف ریاستی جماعتوں کے مخصوص مسائل پر توجہ میں مدد کی لیکن نئی سوچ میں بھی آسانیاں پیدا کیں۔ ”


2010 2007

د - چھٹا جائزہ اجلاس (ا)

- بی ٹی ڈبلیو سی کی ریاستی جماعتوں نے بین المیقاتی عمل کی اہمیت کو جانا، حتمی دستاویز میں ، جس میں کہا گیا:

- ”اجلاس نے نوٹ کیا کہ ریاستی جماعتوں کے اجلاس اور ماہرین کے اجلاس ایک اہم مجلس کے طور پر کام کرتے ہیں قومی تجربات کی تبدیلی اور ریاستی جماعتوں کے درمیان اہم تفصیلی بحثوں کیلئے۔ ریاستی جماعتوں کے اجلاس ذیادہ مشترکہ فہم کا باعث بنتے ہیں اجلاس کی عملدرآمد کو مزید مستحکم کرنے کیلئے کئے گئے اقوامات پر”


2010 2007

ھ - چھٹا جائزہ اجلاس (ب)

۔ متفق، ”۔ ۔ ۔ بحث پر ، اور مشترکہ فہم اور موثر کام کے فروغ کے لئے:

- (ا) قومی عملدرآمد بڑھانے کے ذرائع اور وسیلے ، قومی قانون سازی کے نفاذ سمیت، قومی اداروں کا مضبوط ہونا اور قومی قانون نافذ کرنے والے اداروں کے درمیان تعاون

- (ب) اجلاس کی عمل درآمد پر علاقائی اور ذیلی علاقائی تعاون"


2010 2007

و - چھٹا جائزہ اجلاس (ج)

” ۔ ۔ ۔ ۔ (ج) بائیو سیفٹی اور بائیو سیکیورٹی کو بہتر بنانے کیلئے قومی، علاقائی اور بین الاقوامی اقدامات مرض آور اور ٹاکسن سمیت لیبارٹری سیفٹی اور سیکیورٹی

(د) اجلاس کے ممنوع مقاصد کیلئے استعمال کی قابلیت کے ساتھ بائیو سائنس اور بائیو ٹیکنالوجی کی تحقیق میں پیش رفت غلط استعمال کی روک تھام کے حوالے سے نگرانی، تعلیم، شعور اجاگر کرنے اور اپنانے، اور/یا ضابطہ اخلاق کے بنانے کے مقصد کے ساتھ”


2010 2007

ز - چھٹا جائزہ اجلاس (د)

”۔ ۔ ۔ ۔ (ھ) حیاتیاتی سائنس اور ٹیکنالوجی میں پرامن مقا صد کیلئے بین الاقوامی تعاون، مدد اور تبادلہ بڑھانے کے مقصد کے ساتھ، بیماری پر نگرانی، گرفت، تشخیص اور وبائی امراض کے روکنے کے شعبوں میں گنجائش بنانے کو اجاگر کرنا : (1) ریاستی جماعتوں کیلئے مدد کی ضرورت میں، ضرورتوں کا جاننا، اور گنجائش بڑھانے کیلئے درخواست ؛ اور (2) ریاستی جماعتوں سے جو قابل ہوں، اور بین الاقوامی اداروں سے ، ان شعبوں سے متعلقہ مدد فراہم کرنے کے مواقع ”


2010 2007

ح - چھٹا جائزہ اجلاس (ھ)

- ” ۔ ۔ ۔(و) حیاتیاتی اور سمیاتی ہتھیاروں کے مبینہ استعمال کے معاملے میں کسی بھی ریاستی جماعت کی درخواست پر متعلقہ اداروں کے ساتھ مدد اور ہم آہنگی کی فراہمی، بیماری کی نگرانی، گرفت اور تشخیص اور عوامی صحت کے منصوبوں کے لئے قومی صلاحتوں کو بہتر کرنا”


2010 2007

ط - بی ٹی ڈبلیو سی 2007 کے اجلاس (ا)

- 2007 غور کیا گیا: "قومی عملدرآمد بڑھانے کے ذرائع اور راستے ۔ ۔ ۔ (اور) ۔ ۔ اجلاس کی عمل درآمد پر علاقائی اور ذیلی علاقائی تعاون"

- کئی مشترکہ موضوع سامنے آئے " یہ جاننا کہ ‘سب کیلئے موزوں ایک حجم‘ حل نہیں سمیت قومی عملدرآمد کیلئے ۔ ۔ ۔ "

- "ریاستی جماعتوں کی گنجائش بنانے میں مدد کی ضرورت: قانون سازی اور ضوابط پر ہدایت کے علاوہ ، ریاستی جماعتوں کو عملی مدد کی ضرورت ہے اس طرح کے اقدامات نافذ کرنے اور انتظام کیلئے اپنی گنجائش بنانے کیلئے"


2010 2007

ی - بی ٹی ڈبلیو سی 2007 کے اجلاس (ب)

- " ریاستی جماعتوں نے یقین دلانے کی اہمیت کو جانا کہ قومی عملدرآمدی اقدامات:

- (ا) قابل سزا ٹھرانا اور سرگرمیوں سے روکنا جو اجلاس کی کسی بھی ممانعت کو توڑے اور ممنوعہ سرگرمیوں پر مقدمہ چلانے کیلئے اہم ہو؛

- (ب) اجلاس کی کسی بھی ممانعت کو توڑنے کی دوسروں کی مدد ، حوصلہ افزائی یا دوسروں کو تَرغیب دینے سے روکنا ۔ ۔ ۔ "


2010 2007

ک- بی ٹی ڈبلیو سی 2008 کے اجلاس (ا)

۔ بی ٹی ڈبلیو سی کے 2008 کے اجلاس معکوز تھے:

" ا۔ بائیو سیفٹی اور بائیو سیکیورٹی کو بہتر بنانے کیلئے قومی، علاقائی اور بین الاقوامی اقدامات، مرض آور اور ٹاکسن سمیت لیبارٹری سیفٹی اور سیکیورٹی

ب- اجلاس کے ممنوع مقاصد کیلئے استعمال کی قابلیت کے ساتھ بائیو سائنس اور بائیو ٹیکنالوجی کی تحقیق میں پیش رفت غلط استعمال کی روک تھام کے حوالے سے نگرانی، تعلیم، شعور اجاگر کرنے اور اپنانے، اور/یا ضابطہ اخلاق کے بنانے کے مقصد کے ساتھ

- - - ”


2010 2007

ل- بی ٹی ڈبلیو سی 2008 کے اجلاس (ب)

- بائیو سیکیورٹی ، بی ٹی ڈبلیو سی کے حوالے سے ماہرین کے اجلاس کے لئے تیار ایک پس منظر دستاویز میں سیکرٹریٹ نے بیان کیا۔

”بی ٹی ڈبلیو سی کے قیام میں، سب سے زیادہ عموماً استعمال ہونے والے میکانیہ کے حوالے سے سیکیورٹی اور مرض آور مجسوموں کی نگرانی، ٹاکسن اور متعلقہ وسائل قائم رکھنا اور بحال رکھنا، جیسا کہ 2003 کے اجلاس کے دوران بحث ہوئی ”


2010 2007

م- بی ٹی ڈبلیو سی 2008 کے اجلاس (ج)

- ” ریاستی جماعتوں نی اپنی عام فہم میں مشاہدہ کیا کہ اجلاس کے حوالے سے ۔ ۔ ۔ ۔ بائیو سیکیورٹی منسوب کرتی ہے تحفظ ، قابو اور احتسابی اقدامات نقصان، چوری ، غلط استعمال، انحراف پر عملدرآمد کے لئے یا حیاتیاتی ایجنٹ اور ٹاکسنز اور متعلقہ وسائل کا جان بُوجھ کر چھٹنا علاوہ ازیں ایسے مواد کی ناجائز منتقلی یا رکھنے تک رسائی ”


2010 2007

ن- بی ٹی ڈبلیو سی 2008 کے اجلاس (د)

- ریاستی جماعتیں اس اہمیت پر متفق ہوئیں

- " قومی حکام بائیو سیفٹی اور بائیو سیکیورٹی کے تصورات کو واضح کرتے اور نفاذ کرتے ہیں ۔ ۔ ۔ جیسا کہ ایف اے او ، او آئی ای اور ڈبلیو ایچ او نے بنائے۔ ۔ ۔"

- ” قومی حکومت نمایاں کردار ادا کرے ۔ ۔ ۔ موثر عملدرآمد اور متعلقہ اقدامات کے لگاتار جائزہ کو یقینی بنانے میں”

- ” قومی حکومتیں ۔ ۔ ۔ ۔اس طرح کے آلات استعمال کرتے ہوئے ماموری، تصدیق کا عمل ، جانچ پڑتال یا سہولتوں کیلئے اجازت نامہ، ادارے یا افراد، بائیو سیفٹی اور بائیو سیکیورٹی میں عملے کے افراد کی مناسب تربیت، قابلیت جاننے کا طریقہ کار، مہارت اور افراد کی تربیت ”


2010 2007

س- بی ٹی ڈبلیو سی 2008 کے اجلاس (ھ)

- تعلیم کے مسئلے پر یہ اتفاق ہوا کہ :

- "ریاستی جماعتوں نے مشاہدہ کیا کہ مُذاکرے کیلئے رسمی ضرورتیں، مُفاسیہ یا نصاب، ممکنہ ضروری اجزاء سمیت، متعلقہ سائنٹیفک اور انجینئرنگ کے تربیتی پروگرام اور جاری پیشہ وارانہ تعلیم شعور اجاگر کرنے میں اور اجلاس کے نفاذ میں مدد کر سکیں گے"


2010 2007

ع- بی ٹی ڈبلیو سی 2008 کے اجلاس (و)

- نگرانی کے مسئلے پر یہ اتفاق ہوا کہ :

”سائنس کی نگرانی پر غور کرتے ہو ئے ، ریاستی جماعتوں نے قومی ڈھانچے کی ترقی حیاتیاتی ایجنٹس اور ٹاکسنز کا بطور ہتھیار ممکنہ استعمال سے منع کرنے اور روکنے کی اہمیت کو جانا، متعلقہ لوگوں، چیزوں،علم اور اطلاع ، ذاتی اور سرکاری شعبوں میں اور پوری سائنٹیفک گردش زندگی کی نگرانی کے اقدامات سمیت”


2009 2010

ف - بی ٹی ڈبلیو سی 2009 اور 2010 کے اجلاسوں کیلئے توقعات (ا)

- "۔ ۔ ۔ ۔بین الاقوامی اِشتراک بڑھاتے ہوئے ، حیاتیاتی سائنس اور ٹیکنالوجی میں مدد اور تبادلہ پر امن مقاصد کیلئے، فعال قوت کو بڑھانا، بیماری کی نگرانی، گرفت، تشخیص، اور وبائی امراض کے روکنے کے شعبوں میں- - -"

- اس مصمون پر سائنس دانوں کا ایک صاف کردار ہے


2009 20101

ص - بی ٹی ڈبلیو سی 2009 اور 2010 کے اجلاسوں کیلئے توقعات (ب)

”حیاتیاتی اور ٹاکسنز ہتھیاروں کے مبینہ استعمال کے مامعلے میں کسی بھی ریاستی جماعت کی طرف سے درخواست پر متعلقہ اداروں کے ساتھ مدد اور ہم آہنگی کی فراہمی، بیماری کی نگرانی، گرفت، تشخیص، اور عوامی صحت کے نظام کیلئے قومی صلاحتوں کو بہتر بنانے سمیت”


2010 2007

ق- حیاتیاتی اور سمیاتی ہتھیاروں کے اجلاس کا مستقبل

- سائنسدانوں نے ہمیشہ بی ٹی ڈبلیو سی میں ایک کردار ادا کیا ، یا تو ریاستی جماعتوں کی وقتی درخواستوں کے ذریعے یا جائزہ اجلاس کے پس منظر دستاویز میں حصہ داری کے ذریعے

- جائزہ اجلاس کے تسلسل سے ظاہر ہونے والے اضافی اتفاق رائے نے سائنٹیفک اور پیشہ ور برادری کو مختلف درخواستوں بنا کر دیں

- تاہم، امکان ہے کہ بی ٹی ڈبلیو سی میں سائنسدانوں کا کردار بڑھے گا


2010 2007

ر - بی ٹی ڈبلیو سی میں سائنسدانوں کا کردار


2010 2007

نمونہ سوالات

ا- حیاتیاتی تحفظ کی مختلف وضاحتوں کا تعین کریں۔

ب- کیا ریاستوں کو سائنس کی انضباطی کرنی چاہیے اور ”اہم کردار کرنا چاہیے حیاتیاتی تحفظ کی موئژ عملدآمد کو یقینی بنانے میں"?

ج- بحث کریں کیا حیاتیاتی تحفظ کی تعلیم لازمی ہونی چاہیے? کیا آپ سمھجتے ہیں کہ سائنسدانوں کی تحقیق کے نتائج کی غلط عملدآمد کی ذمہ داری ان پہ آتی ہے?

د- کیا آپ سمجھتے ہیں کہ سائنس کی نگرانی ممکن ہے یا واقعی فائدہ بخش ہے ? ”متعلقہ افراد، سازوسامان، علم اور معلومات کی نگرانی کیلئے قومی ڈھانچے اور اقدامات فائدہ بخش ہیں” ?


References

References

(Slide 2)

United Nations (2002) “Final Document” BWC/CONF.V/17, Geneva: United Nations. Available from http://www.opbw.org/rev_cons/5rc/docs/rev_con_docs/i_docs/BWCCONF.V-17-(final_doc).pdf

Mahley [US] (2001) “Statement by the United States to the ad hoc group of biological weapons convention states parties” Geneva, Switzerland July 25, 2001. http://missions.itu.int/~usa/press2001/0725mahleybriefing.htm

(Slide 3)

United Nations (2005) “Report of the Meeting of States Parties”, BWC/MSP/2005/3, 14 December 2005, Geneva: United Nations. Available from http://www.opbw.org/new_process/msp2005/BWC_MSP_2005_3_E.pdf

(Slide 4-8)

United Nations (2006) “Final Report” BWC/CONF.VI/6, December 8, 2006, Geneva: United Nations. Available from http://daccessdds.un.org/doc/UNDOC/GEN/G07/600/30/PDF/G0760030.pdf?OpenElement


2010 2007

(Slide 9 and 10)

United Nations Office at Geneva (2007) Biological Weapons Convention Experts Meeting Concludes. News and Media. Available from http://www.unog.ch/unog/website/news_media.nsf/(httpNewsByYear_en)/EC3FF1F841C0FDA0C1257341004CD9E6?OpenDocument

(Slide 11)

United Nations (2008) “Report of the Meeting of States Parties”, BWC/MSP/2008/MX/3 8 September 2008, Geneva: United Nations. Available at http://daccessdds.un.org/doc/UNDOC/GEN/G08/630/84/PDF/G0863084.pdf?OpenElement

(Slide 12)

Implementation Support Unit (2008) “Biosafety and Biosecurity” (BWC/MSP/2008/MX/INF.1). Geneva: UNOG. Available at: http://daccessods.un.org/access.nsf/Get?Open&DS=BWC/MSP/2008/MX/INF.1&Lang=E

(Slide 13)

United Nations (2008) “Report of the Meeting of States Parties”, BWC/MSP/2008/MX/3 8 September 2008, Geneva: United Nations. Available at http://daccessdds.un.org/doc/UNDOC/GEN/G08/630/84/PDF/G0863084.pdf?OpenElement


2010 2007

(Slide 14-16)

United Nations (2008) “Report of the Meeting of States Parties”, BWC/MSP/2008/MX/3 8 September 2008, Geneva: United Nations. Available at http://daccessdds.un.org/doc/UNDOC/GEN/G08/630/84/PDF/G0863084.pdf?OpenElement

(Slide 17)

United Nations Office at Geneva (2009) Disarmament: Meeting of Experts (24 - 28 August 2009) - Information for Action. Available from http://www.unog.ch/80256EE600585943/(httpPages)/F1CD974A1FDE4794C125731A0037D96D?OpenDocument

(Slide 18)

United Nations (2008) “Report of the Meeting of States Parties”, BWC/MSP/2008/MX/3 8 September 2008, Geneva: United Nations. Available at http://daccessdds.un.org/doc/UNDOC/GEN/G08/630/84/PDF/G0863084.pdf?OpenElement

(Slide 20)

Revill. J & Dando. M. R (2007) "Life Scientists and a Culture of Responsibility: After Education. What?" Science & Public Policy Special Issue. 35(1), February 2008. Available from http://www.ingentaconnect.com/content/beech/spp/2008/00000035/00000001/art00005


  • Login